لوح و قلم تیرے ہیں

0 9

منگل 27اکتوبر بعد نمازمغرب قلم کاروان کی ہفت روزہ ادبی نشست اسلام آبادمیں منعقدہوئی۔ پیش نامے کے مطابق آج کی نشست میں نوجوان لکھاری جناب شاہدمنصور کامضمون’’حقیقت عالم ﷺ‘‘اور معروف محقق،دانشور اور نقاد جناب ساجدحسین ملک کا مضمون ’’سیرت النبیﷺ کی کہانی حضرت علی المرتضی ؓکی زبانی‘‘طے تھے۔یہ نشست ماہ ربیع الاول کے حوالے سے مطالعہ سیرۃ النبی ﷺ پر مبنی تھی۔جناب ملک اللہ بخش کلیار رکن اسلامی نظریاتی کونسل جومتعدد کتب کے مصنف ،دینی اسکالر اورایک طویل عرصہ سے مدینۃ المنورہ میں مقیم ہیں نے صدارت کی ۔جناب ڈاکٹرمرتضی مغل نے تلاوت قرآن مجید،جناب وقاراحمد نے مطالعہ حدیث نبویﷺ،جناب محمدافضل نے اپنی خوبصورت آوازمیں نعت رسول مقبولﷺ اورجناب محمدمنیرحسین نے گزشتہ نشست کی کارروائی پڑھ کرسنائی۔
صدرمجلس کی اجازت سے جناب شاہدمنصورنے اپنا مضمون پڑھا،مضمون کے آغاز میں نبی محترم ﷺکے بارے میں متعددقرآنی آیات درج تھیں،بعد کے حصے میں حیات طیبہ ﷺکو بڑی خوبصورتی سے چندصفحات میں سمیٹ دیاگیاتھا،نبی اکرم ﷺ کی زندگی کے واقعات کے ساتھ ساتھ بڑے برموقع اور عقیدت بھرے تبصرے بھی کیے گئے تھے،آخر میں انہوں نے کہاکہ صرف 12ربیع الاول منالیناکافی نہیں ہے بلکہ اپنی زندگی کو سیرت النبیﷺ کے مطابق ڈھالنا بھی ازحد ضروری ہے۔بعد ازاں جناب ساجد حسین ملک نے اپنامضمون پیش کیا،مضمون میں نہج البلاغہ اور دیگر اثناعشری حوالوں سے حضرت علی المرتضی کے وہ قیمتی اقوال نقل کیے گئے تھے جو انہوں نے آپﷺ کے بارے میں ارشادفرمائے تھے،ان اقوال میں نبی محترم ﷺ کے اعلی مقام و مرتبہ اور ختم نبوت کے عقیدے کو تفصیل سے بیان کیاگیاتھا،مضمون کے آخر میں صاحب تحریرنے کشمیر میں ہونے والے مظالم اور فرانس میں گشتاخانہ خاکوں کو بھی ہدف تنقید بنایا۔مقالات پر تبصرہ کرتے ہوئے جناب ڈاکٹرمرتضی مغل نے قرآنی آیات کی روشنی میں سیرت رسول ﷺ بیان کی ،انہوں نے کہاکہ قرآن مجید اللہ تعالی کا بہترین تحفہ ہے جو نبی اکرمﷺ کے توسط سے امت مسلمہ کو خصوصاََاور کل انسانیت کو عموماََمیسرآیا،انہوں نے قرآن مجیدکی وہ آیات بھی پڑھیں جو براہ راست انسانوں سے مخاطب تھیں اوران آیات میں نبی علیہ السلام کی سیرت پر عمل کرنے کاحکم دیاگیاتھا۔جناب عالی بنگش نے اپنی ایک آزادنظم سنائی جونعت کے اسلوب میں سلام کے طورپر لکھی گئی تھی،شرکاء نے اس نظم کو بہت پسندکیا۔جناب سبطین رضالودھی نے کہاسیرت کاپیغام امت کے اتحادکادرس دیتاہے ۔تبصروں کے بعد معمول کے سلسلوں میں جناب شہزادعالم صدیقی نے مثنوی مولائے روم سے اپناحاصل مطالعہ پیش کیااور جناب عبدالرازق عاقل نے ایک نعت سنائی اورشرکاء نشست سے دادموصول کی۔
نشست کے صدرمجلس ،رکن اسلامی نظریاتی کونسل جناب اللہ بخش کلیارنے اپنے صدارتی خطبے میںپیش کیے گئے مقالات کی بے حد تعریف کی اور بتایا کہ وہ بچپن میں نعتیںپڑھنے کے بہت شوقین تھے،انہوں نے بتایا کہ بچپن میں پڑھی گئی نعتوں کے فیض و توسل سے وہ گزشتہ تیس سالوں سے مدینہ منورہ جیسے مقدس ترین شہر میں مقیم ہیںاورانہیں نبی علیہ السلام کا جوار میسر ہے۔صدر مجلس نے قلم کاروان کے اس فیصلے کی تعریف و توصیف کی کہ ماہ ربیع الاول کو مطالعہ سیرت النبی ﷺ کے حوالے سے منایاجائے گا،انہوں نے کہاکہ وہ ایک طالب علم کی حیثیت سے آئندہ بھی ان مقدس و محترم مجالس میں بصدشوق شریک ہوتے رہیں گے۔صدارتی خطبے کے ساتھ ہی آج کی ادبی نشست اختتام پزیر ہو گئی۔

Leave a Reply

%d bloggers like this: