Aqsa Ramzan Today's Columns

بچوں کی تربیت کیسے کریں از اقصی رمضان

Aqsa Ramzan
Avatar
Written by Todays Column

ماں کی تخلیق کا مقصد صرف نسل انسانی کو آ گے بڑھانا نہیں تھا۔بلکہ بچوں کی تربیت کو پروان چڑھانے کے لئے ماں ایک اہم کردار ادا کرتی ہے۔ماں کی رضامندی کو رب کی رضامندی اور ماں کی نافرمانی کو رب کی نا فرمانی قرار دیا گیا۔
دنیا اور آ خرت کی کامیابی میں ماں کی عظمت و عزت و تکریم کو واجب قرار دے دیا گیا۔
مگر آ ج کی ماں اپنے رتبے کو پہنچاتی ہی نہیں۔بچے کو دنیا کی تعلیم دلوانے کے لیے سخت سے سخت حالات سے بھی گزر جاتی ہے۔افسوس صد افسوس! آ خرت کی زندگی جو ہمیشہ رہنے والی ہے اس کے لیے تیاری ہی نہیں کروا رہی اپنے بچوں کو۔ کاش آ ج کی ماں اپنے بچوں کی شخصیت میں نبی آ خر الزماں صلی علیہ وآلہ وسلم کی سنتوں کا رنگ بھرتی۔اس کی زندگی کا مقصد آ خرت کی کامیابیوں کا حصول بناتی۔اس کی شخصیت کو صحابہ کرام کی لازوال ایمان افروز محبت سے چار چاند لگاتی۔مگر اے ماں یہ تو نے کیا کیا!
اپنی اولاد کو سپر مین اور اسپائیڈر مین کے خیالات میں گم کر دیا۔
اریتم اسے محمد بن قاسم اور طارق بن زیاد بناتی۔مگر تو نے تو اسے فانی دنیا کے فریبوں میں کھو جانے دیا۔
ارے تجھے تو اپنی اولاد کو مولا علی کرم اللہ وجہہ کی شجاعت دینی تھی۔عمر فاروق کا ایمان دینا تھا۔عثمان غنی کی سخاوت دینی تھی۔ابوبکر صدیق کی صداقت دینی تھی۔
سرور کائنات کی محبت سے اس کا سینہ منور کرنا تھا۔رب کائنات سے اس کی ملاقات کروانی تھی۔بی بی فاطمہ کی شرم وحیائاور پاکیزگی سے اس کے تصورات و خیالات سے اس کو روشناس کروانا تھا۔
آ ج کی ماں جاگ ذرا۔اگر اب بھی تو نہ جاگی۔ تو بربادی کا ایک طوفان اب بھی تمھارے سامنے سینہ تان کر کھڑاہے۔اب بھی وقت ہے۔ان قدروں کو پہچان ذرا۔ جسے کہا گیا ”ماں کے پیروں تلے جنت ہے۔اپنے اس رتبے کو پہچان زرا۔
دنیا کی فانی محبت سے تھوڑا الگ کر،اپنے ذہن کو اس چمک ودمک سے آ زاد کر۔
اب بھی وقت یے۔اٹھ اپنے ایمان کو تازہ کر،اس دنیا کی محبت کو فراموش کر۔اور اپنی آ خرت کی فکر کر جس کے لیے تو نے جوابدہ ہونا ہے۔
اس دنیا میں تیری اولین زمہ داری اولاد کی پرورش ہے۔تیرا کام اس کی شخصیت میں دنیاوی اخلاق واطوار کو سنوارنااور دین کی خدمت اوراس کے فرائض کو اجاگر کرنا ہے۔
اپنی اولاد کو اپنی آ خرت میں نجات کا ذریعہ دنیا میں صدقہ جاریہ بنانا ہے۔
اللہ سے دعا ہے مجھے اور آ پ سب کو دنیا و آخرت میں کامیاب ہونے کے لییاپنی زمہ داریوں کو پورا کرنے کی توفیق دے۔اللہ ہم سب کا حامی و ناصر ہو۔(آ مین یا رب العالمین)

٭…٭…٭

About the author

Avatar

Todays Column

Todays Column

Leave a Comment

%d bloggers like this: