Shahida Irshad Khan Today's Columns

عورت کا مقام از شاہدہ ارشاد خان

Shahida Irshad Khan
Written by Todays Column

میں اکثر عورتوں کو اپنے حقوق کا رونا روتے اور خاص کر جب عورتوں کو سڑکوں پر اپنے حقوق مانگتے دیکھتی ہوں تو دل میں بہت سے سوال اٹھتے ہیں اور دل دکھ جاتا ہے مجھے سمجھ نہیں آتی کہ مذہب اسلام کی عورت کون سے حقوق مانگنے سڑکوں پر نکلتی ہے جبکہ اللہ تعالی نے ہمارے پیارے نبیﷺ کے ذریعے چودہ سو سال پہلے اسلام میں عورت کا مقام بتا دیا تھا آئیں اسلام میں عورت کا مقام دیکھیں
عورت اگر بیوی کے روپ میں تھی تو نبی ﷺ? نے فرمایا خدیجہ اگر تم میری جلد بھی مانگتی تو میں اتار کر دے دیتا جب یہی عورت بیٹی کے روپ میں تھی تو نبی ﷺ? نے نہ صرف کھڑے ہوکر اس کا استقبال کیا بلکہ فرمایا میری بیٹی فاطمہ میرے جگر کا ٹکرا ہے جب یہ عورت بہن کے روپ میں تھی تو نبی ﷺ? نے فرمایا کہ بہن تم نے خود آنے کی زحمت کیوں کی تم پیغام بھجوا دیتی میں سارے قیدی چھڑا دیتا اور جب یہ عورت ماں کے روپ میں آئی تو قدموں میں جنت ڈال دی گئی اور حسرت بھری صدا بھی تاریخ نے محفوظ کی فرمایااے صحابہ کرام کاش! میری ماں زندہ ہوتی میں نماز عشاء پڑھا رہا ہوتا اور میری ماں محمد پکارتی تو میں نماز روک کر اپنی ماں کی بات سنتا عورت کی تکلیف کا اتنا احساس فرمایا گیا کہ دوران جماعت بچوں کے رونے کی آواز سنتے ہی قرأت مختصر کر دی
خدارا مغرب کی لڑکیوں کی آزادی دیکھ کر اپنے حقوق نہ مانگیں ان کے پاس سوائے آزادی کے اور کچھ نہیں ہے اور آپ کے پاس اللہ تعالی کا دیا ہوا خاص مقام ہے بیشک کبھی کبھی مشکلوں پریشانیوں اور تکلیفوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے مگر اپنے مقام کے تقدس کو پہچان کر اپنے گھروں میں پرسکون زندگی گزاریں
اللہ تعالی ہم سب عورتوں کو یہ بات سمجھنے اور عمل کرنے کی توفیق عطا فرمائے
آمین ثم آمین
٭…٭…٭

About the author

Todays Column

Todays Column

Leave a Comment

%d bloggers like this: